0
My Cart - 0 items
  • No products in the cart.

Babchi / بابچی

-14%

Babchi / بابچی

Psoralea Corylifolia Q

From 120

Category:

مختلف نام:

مشہور نام بابچی(babchi)۔ ہندی بابچی۔ سنسکرت دا کوچی۔ تیلگو کار بوگی۔ لاطینی(Psoralea Corylifoliaq)۔

شناخت:

یہ بوٹی بنگال، بمبئی اور ہندوستان کے دوسرے میدانی علاقوں میں پائی جاتی ہے۔ راجپوتانہ کی بابچی (babchi) سب سے بڑھیا ہوتی ہے۔ اس کا پودا تین فٹ تک لمبا، شاخیں خانے دار  جن میں نمدر پروئے ہوتے ہیں اور کہیں کہیں سفید روئیں بھی پائی جاتی ہیں۔ پھولوں کے خوشے  لگتے ہیں۔ بیساکھ اور جیٹھ کے مہینوں میں اس کا پودا خشک ہو جاتا ہے اور اس کے بیچ گر جاتے ہیں۔ برسات شروع ہوتے ہی بیجوں سے نئے پودے اگ آتے ہیں۔ جب اس (babchi) کے پھول جھڑتے ہیں تو ان کی جگہ غلاف دار سفید گول گول پھلیاں لگتی ہیں۔ ایک گچھے میں تین یا چار پھلیاں ہوتی ہیں۔پھلیوںکی خوشبو مکو کی خوشبو کی طرح ہوتی ہے۔ بیج سیاہ رنگ  کے قدرے چپٹے اور قدرے گول ہوتے ہیں۔

 فوائد:

بابچی (babchi) کو مدبر(شدھ) کر کے استعمال کریں تاکہ اس کی مضرت دور ہواور اثرات میں اضافہ ہوجائے۔بابچی مرض برص،پھلبہری( لیکوڈرما،(Leucoderma) کی خاص (babchi benefits) دوا ہے۔ اس مرض کے علاج میں ایلو پیتھک،آیورویدک اور یونانی طب کے حاملان نے بابچی کو زود اثر قرار دیا ہے۔ ڈاکٹری طریقہ علاج میں بابچی (babchi) آئل جس کا تجارتی نام(Ludemerol)ہے، داغوں  پر لگانے کے لئے عمدہ (babchi benefits) دوا ہے۔ مقام ماؤف برش سےدن میں  دو تین بار لگایا جائے۔ دیسی طریقہ علاج میں بابچی کا تیل بذریعہ پتال جنتر نکال کر داغوں پر لگائیں۔

سفید داغوں( پھلبہری) کا کامیاب علاج، بابچی (babchi)

بابچی لیپ:

تخم بابچی (babchi) پانچ تولہ، تخم بکائن تین تولہ، دونوں کو علیحدہ علیحدہ باریک کرکے رکھ لیں۔ سونٹھ بقدر ضرورت کو عرق گلاب میں بھگو دیں۔ صبح اس (babchi) کو  پتھر کی کنڈی میں عرق گلاب ڈال کر خوب گھسیں اور بقدر حاجت پتلا سا لیپ بنا لیں۔ پھر ان تینوں کو ملا لیں۔ داغ والی جگہ کو کھردرے کپڑے سے خوب سرخ کر کے یہ دوااو پر لگا کر آگ سے سینکیں  اور بار بار گرم ٹکو ر کرنی چاہئے۔

سکھدائیک  ملتانی دواخانہ پانی پت میں ہم نے سینکڑوں مریضوں کو استعمال کرایا یہ ہمارے مجربات میں سے ہے۔ اس سلسلہ میں خیال رہے کہ اگر برص کا داغ کسی ایسی جگہ پر ہو جہاں سینک نہ کیا جاسکتا ہو تو کپڑے کی گیند سی بنا لیں اور اسے گرم کرکے رکھ لیا کریں۔ ایک مریض کو سفید داغ ہاتھوں اور سینوں پرتھے۔ مندرجہ بالا لیپ اور خوراکی طور پر’’ دوای برص‘‘ دی گئی۔ مریض کو ایک ماہ میں صحت ہو گئی۔ ایسے داغ جہاں سوئی چبھونے سے خون نہ نکلے یا دوا استعمال کرنا بیکار ہے کیونکہ یہ مرض لاعلاج ہے۔ کیونکہ خون نکلے تو قابل علاج ہے ورنہ نہیں۔

دیگر:

بابچی (babchi) کو بیج مولی اور ہلدی کے ساتھ پیس کر گائے کے دہی کے توڑ میں ملا کر روزانہ گھنٹہ بھرتک برص کے داغوں پر ملیں۔ آرام آجائے گا۔

 دیگر:

بابچی (babchi) شدھ دو ماشہ، رات کو گرم پانی میں بھگوکر صبح اس کا نتھار  پلانا اورپھوگ  کو داغوں پر لگانابرص(پھلبہری) کے لئے ازحد مفید (babchi benefits) ہے۔

 دیگر:

بابچی  حسب ضرورت لے کر نہایت باریک پیس لیں پھر اس میں جامن کے پھلوں کا رس ڈال کر برابر اکیس دن کھرل کریں۔ بعدازاں پیشاب گائے کے ہمراہ اکیس روز تک  کھرل کریں اور گولیاں بنا کر خشک کرلیں۔ ان گولیوں کو ادرک کے رس میں گھس کر سفید کوٹ کے داغوں پر لیپ کریں۔ چند روز میں داغ دور (babchi benefits) ہو جائیں گے۔

حب بابچی:

بابچی، چھلکا درخت انجیر جنگلی، گندھک آملہ سار،مردار سنگ ہر ایک ایک تولہ، سب کو باریک پیس کر ادرک کے پانی میں حل کرکے بڑی بڑی گولیاں بنا کر رکھ لیں۔ ضرورت کے وقت ایک گولی ادرک کے رس  میں حل کرکے لیپ کریں۔برص، جذام، سفید داغوں کو دور (babchi benefits) کرتا ہے۔

دوائےبرص:

بابچی شدھ، چاسکو شدھ، تخم پنواڑ، چھلکا درخت انجیر دشتی، نیم کے درخت کی اندرونی چھال سایہ  میں خشک کی ہوئی ہر ایک دو تولہ۔ سب کو کوٹ کر سفوف کریں اور چھان لیں۔چھ  ماشہ یہ سفوف رات کو پانی میں بھگو دیں۔ صبح اس کا زلال پلائیں اور پھوگ  پیس کر داغوں پر لیپ کریں۔ سوائےبیسنی روٹی( چنے کی روٹی) بغیر نمک کے اور کوئی غذا نہ دیں۔برص پھلبہری) کے لئے بے حد مفید (babchi benefits) ہے۔

 دیگر:

ہڑتال ورقیہ  ایک حصہ، بابچی چھ حصہ،  سفوف بنا کر پانی کی مدد (babchi benefits) سے داغوں پر  ہلکا لیپ کریں لیکن آنکھوں وغیرہ نازک جگہوں پر نہ لگائیں۔

 نوٹ:

اگر بابچی کے مرکب لیب سے جلن ہو تو ایک دو دن روک کر پھر استعمال کریں۔

Form

Whole, Powder

Weight

50gm, 100gm, 250gm, 500gm

Reviews

There are no reviews yet.

Be the first to review “Babchi / بابچی”

Your email address will not be published. Required fields are marked *