0
My Cart - 0 items
  • No products in the cart.

Pakhra /گوکھرو – پکھڑا

-13%

Pakhra /گوکھرو – پکھڑا

مختلف نام:اردو نام خارخسک۔ پنجابی بھکڑا۔ تامل ترنجی۔ اسے ہندی میں گوکھرو،گوکھولہ۔ بنگالی گوک شورا۔ مرہٹے لہنا  گوکھرو۔ فارسی خار خسک۔ تیلگو تالیرومولو، چیرو پالیر۔ سنسکرت اگوک شوری،اکشوکندھا۔ لاطینی بولس ٹریسڑساور انگریزی میں سمال کا ل ٹراپس{سیڈز آف}کہتے ہیں۔

(Tribulbus Terrestris) (Small Call Trops) (Seeds Of)

From 160 From 140

Clear
Category:

مزاج: بعد اسے سرد و خشک اور بعض گرم و خشک اور بعض معتدل  مانتے ہیں۔ ہمارے تجربات میں اس کا مزاج گرم و خشک ہے۔

مقدار خوراک:6سے9گرام تک۔

فوائد: یہ ایک ایسی بوٹی ہے جو ہر جگہ ہوتی ہے لیکن افسوس کی بات ہے کہ بہت سی جڑی بوٹیوں کی طرح اس کی بھی بے قدری ہو گئی ہے۔

لوگوں کی سمجھ کو دیکھئے کہ ہندوستان جیسے ملک کی اکسیر ادویات کوجو بغیر کسی قیمت پر حاصل اور تیار ہو سکتی ہیں، بلاوجہ ضائع ہورہی ہیں اور امراض کو دور کرنے کے لئے دوسرے ملکوں کی ادویات پر کروڑوں روپیہ برباد کیا جا رہا ہے۔ انہیں اکسیر بوٹیوں کو ممالک غیر کے دواساز گھاس کے بھاؤ یہاں سےلے جا کر شکل و صورت بدل کر یہاں لاتے ہیں اور ملک کی دولت سمیٹ کر لے جاتے ہیں۔ باوجود اسکے ہم آنکھیں نہیں کھولتے اور ہاتھ پاؤں نہیں ہلاتے گوکھرو ایک ایسی جڑی ہے  جو کہ مدر آیام و مدر بول، گردہ اور مثانہ کی پتھری توڑتی ہے۔ جریان، عسر البول،احتباس بول اورورم گردہ مزمن، پیشاب کی جلن، بواسیر،اپنڈےسائیٹس،قولنج، یرقان، ضعف جگر،دمہ  اور کھانسی وغیرہ کے لئے بےنظیر ہے۔

گوکھرو کے آسان و آزمودہ مجربات

پتھری:گوکھرو20 گرام، پانی 250 گرام۔ گوکھرو کو پانی میں رگڑ کر چھان کر صبح، دوپہر اور شام کے وقت پلانے سے گردہ یا مثانہ کی پتھری یا ریگ  دور ہوتے ہیں۔ رکا ہوا پیشاب کھل کر آتا ہے اور پیشاب کی نالی کے زخم وپیپ رفع  ہو جاتی ہے۔

درد گردہ:گوکھرو20 گرام کو 250 گرام پانی میں جوش دیں، جب آدھا{125 گرام}پانی رہ جائے تو چھان کر پلائیں۔ دن میں دو تین بار اسی طرح پلائیں، درد گردہ کے لئے مفید ہے۔ مذکورہ بالاطریق پر  گوکھرو کا استعمال مُوتر گرنتھی یا پروسٹیٹ میں مفید ہے۔

اپنڈے سائیٹس: گوکھرو20گرام کو 200 گرام پانی میں جوش دیں۔ جب آدھا رہ جائے تو چھان کر دن میں دو تین بار پلائیں۔ اس سے بنا آپریشن اپنڈےسائیٹس آرام آجاتا ہے۔

امراض جگر: گوکھرو20 گرام،مرچ سیاہ 5 گرام دونوں کو 250 گرام پانی میں رگڑ کر صبح و شام کی لالی ووڈ جگر کے بڑھنے پرسست پوجا نے میں بہت مفید ہے۔علاوہ ازیں ضعف جگر اور کام ہو جاتا ہے۔

پیشاب کی بندش:گوکھرو پیشاب آور ہےاور عام طور پر جس قدر پیشاب آور ادویات ہیں وہ سب کی سب ویرج کو   کمزور کرتی ہیں  جس سے قوت میں کمی آ جاتی ہے لیکن گوکھرو میں یہ نقص  نہیں بلکہ خلاف اس کے گوکھرو کے استعمال سے قوت میں اضافہ ہو جاتا ہے۔

دس گرام گوکھروکوکوٹ کر آدھا کلو پانی میں جوش دیں۔ جب 125 گرام پانی باقی رہے تب چھان کر15 گرام گرم دودھ اور حسب ضرورت میٹھا کرکےصبح وشام استعمال کریں۔

بواسیر خونی:گوکھرو دس گرام کو20 گرام پانی میں رگڑ کر چھان کر صبح وشام پلانا بواسیر خونی کو دور کرتا ہے بادی بواسیر کے لئے بھی مفید ہے۔

جریان:گو کھرو دس گرام کوٹ کر آدھا کلو پانی میں جوش دیں، جب 125 گرام باقی رہ جائے۔ تب چھان کر ٹھنڈا کر کے صبح و شام پلائیں مفید ہے۔

جریان:گوکھرو دس گرام کوٹ کر آدھا کلو پانی میں جوش دیں، جب 125گرام باقی رہ جائے تب چھان کر ٹھندا کر کے صبح و شام پلائیں۔ اس سے جریان و احتلام دور ہوتا ہے۔

بواسیر کے مسےّ:ایک کلو گوکھرو کو کوٹ کر بارہ کلو پانی میں رات کے وقت بھگودیں۔ صبح آگ پر پکائِیں۔ دو کلو پانی رہنے پر اتار کر چھان لیں اور تلی کے تیل ایک کلو میں جلالیں اور اس تیل کے محلول کو دن میں تین چار بار بواسیر کے مسوّں پر لگانا مفید ہے۔ مسوّں کو بناآپریشن آرام آجائے گا۔

 دائمی سر درد:گوکھرو 20 گرام کو کوٹ کر آدھا کلو پانی میں جوش دیں۔جب 125 گرام پانی باقی رہے تب چھان کر کھانسی اور دمہ میں اگر بلغم نہ ہو تو دس گرام گھی  ملا کر گرم گرم صبح، دوپہر اور شام کے وقت  پلائیں۔ اگر بلغم نکلتا ہو بغیر گھی کے نزلہ، زکام اور درد سر دائمی کے لئے مفید ہے۔

خناق:گوکھرو 20 گرام کوٹ کرآدھا کلو پانی میں جوش دیں، 125گرام پانی باقی رہے تو چھان کر چار چار گھنٹہ کے بعد پلائیں۔ اس سے خناق دور ہو جاتا ہے۔ علاوہ ازیں آواز کی خرابی،منہ، زبان اور حلق کا پکنا، زخم اور چھالے اور ٹانسلز وغیرہ امراض بھی دور ہو جاتے ہیں۔

پیشاب میں خون آنا:گوکھرو 20 گرام کو 250 گرام پانی میں رگڑ کر اور چھان کر صبح و شام  پلانے سے پیشاب کازرد،سرخ نیلا یا سیاہ آنا،کم آنا،گدلا یا گاڑھاآنا، بدبو دار آنا اورپیشاب میں خون آنا بھی بند ہو جاتا ہے۔

دل کی اینٹھن:گوکھرو 20 گرام کو آدھا کلو پانی میں جوش دیں، 200 گرام پانی باقی رہے تو چھان کر ٹھنڈا کریں اور دس گرام مصری ملا کر صبح، دوپہر اور شام کے وقت پلائیں۔ اس سے دل کے امراض مثلا دل کی حالت  گھٹنا، تیز ہونا، بے قاعدہ ہونا، چلتے چلتے رُک رُک کر یا جھٹکا سا کھاکر چلنا، خون کا دباؤ زیادہ ہونا۔ دل کا بڑھ جانا، پھیل جانا، دل کی دھڑکن اپنا کام پوری طرح نہ کرے اور صدمہ سے  گھبرا جانا، سوتے میں ڈر کر اٹھنا، دل کی اینٹھن یا جھلی  میں پانی پڑ جانا چربی کا بڑھ جانا وغیرہ امراض دور ہوجاتے ہیں اور وہم کا عارضہ بھی دور ہو جاتا ہے۔

بالوں کا گرنا:گوکھرو ایک کلو کوٹ کر 12 کلو پانی میں رات کو بھگو دیں۔ صبح نرم آنچ پر پکائیں۔ جب دو کلو پانی باقی رہے تو باقی ماندہ پانی میں تیل سرسوں آدھا کلو ملا کر پکائیں۔ جب پانی جل کر صرف تیل باقی رہ جائے تو آگ سے اتار کر ٹھنڈا کرکے چھان کر رکھیں۔ اس تیل کو سر میں لگانے سے بالوں کی جڑیں مضبوط ہوتی ہیں۔ بال سیاہ، لمبے اور چمک دار رہتے ہیں اور جلدی سفید نہیں ہوتے۔آنکھوں کی نگاہ اور کانوں کی سننے کی طاقت پر اچھا اثر پڑتا ہے۔ کان اور آنکھیں بہت سے امراض سے محفوظ رہتی ہے۔

دل کی کمزوری:یا کمی خون میں جب کہ  ہاتھ اور پاؤں ٹھنڈے رہتے ہو یا سردی یا سرد پانی کی وجہ سے نیلے یا سیاہی مائل رہتے ہوں تو 25 گرام گوکھرو کو کوٹ کر پوٹلی باندھ کردودھ میں پکائیں۔ پھر پوٹلی نکال کر پھینک دیں اور دودھ میں حسب ضرورت مصری یاچینی ملا کر صبح اور  اسی طرح شام کے وقت پلانا مفید ہے۔{ حکیم ڈاکٹر خوشی محمد۔ رجسٹرڈ یونانی پریکٹیشنرز}

ٹوٹی ہڈی کا علاج:میرے پڑوس میں ایک مزدور پیشہ شخص رہائش پذیر ہے۔ تین دن اسے گھر پر چارپائی پر پڑا دیکھ کر چوتھے دن مذاق سے اس کے پاس جا کر کہا کہ بہت روپیہ کمالیہ  ہےکام کاج چھوڑ کر لیٹے رہتے ہوتواس نے اپنی معذوری ظاہر کی کہ میں دکان میں بیٹھا ہوا تھا کہ اوپر سے ایک بوری پھسل کر مجھ پر آپڑی جس سے کمر کی ہڈی کو سخت چوٹ آئی ریڑھ کی ہڈی کے مہرے ٹوٹ گئے ہیں لیکن اس نے بتایا کہ میرے پاس اس کا کوئی علاج نہیں ہے۔ اب نہ پہلو بدل سکتا ہوں نہ بیٹھ سکتا ہوں۔بس دن رات چت پڑا رہتا ہوں۔اگرچت  پڑا رہوں توکوئی درد وغیرہ نہیں ہے۔ اگر ذرا بھی حرکت کرتا ہوں تو بہت شدت کا درد ہو تاہے۔

میں نے اسے بتایا کہ 250گرام آرد گندم گھی میں بریاں کرکے کڑاہی سے الٹ کر دوسرے برتن میں ڈال لو،پھر 250 گرام گھی میں 250 گرام قند سایہ  عمدہ پگھلاؤ جب اچھی طرح حل ہو جائے توآرد  گندم بیاں شدہ ڈال کر اچھی طرح باہم ملا کر کڑاہی چولہے سے نیچے اتار لو۔ جب حرارت کم ہو جائے تو 250 گرام گوکھرو، 250 گرام کمر کس، 50 گرام سونٹھ  جو پہلے کپڑے سے چھان کر تیار رکھے ہوں۔ کڑاہی میں ڈال کر ملا لو اور کسی شیشے یا چینی کے برتن میں محفوظ رکھ لو اور روزانہ صبح و شام یہ ” پنجیری” کھا لیا کرو۔

اس پر اس نے عمل کیا اور ایک ماہ استعمال کرکے مکمل فائدہ اٹھایا۔ صحت یاب ہو کر پھر اپنا کام{مزدوری} شروع کردی۔ مگر اب وہ ہر سال موسم سرما میں بجائے نشاستہ وغیرہ کے اسی بتائے ہوئے طریقہ سے گوکھرو استعمال کر لیتا ہے اور بالکل تندرست وتوانا ہے۔

خونی قے:ایک آدمی کو چیت کے  مہینے سےساون تک خونی قے اور  خون کا پیشاب،چار سال سے دورہ شروع تھا۔ جو ساون کے بعد آہستہ آہستہ خود ہی رک جایا کرتا تھا یعنی خون آنا بند ہو جاتا تھا مگر خون خارج ہوجانے کے سبب کمزور ہوجاتا تھا اور چارپائی پر ہی پڑا رہتا تھا۔میں نے اسے گوکھرو کھانے کی ہدایت کی۔ کم از کم 5 گرام سفوف ہر روز پانی سے پھانک لیا کرو۔ انشاءاللہ سب شکایتیں دور ہو جائیں گی۔ چنانچہ آج آٹھ سال گزر چکے ہیں اسے پھر یہ شکایت پیدا نہیں ہوئی۔

ذیابیطس:سفوف گوکھرو 5 گرام صبح و شام پانی سے کھلانے سے بار بار اور کثرت سے پیشاب آنے کی شکایت کے علاوہ ذیا بیطس بھی دور ہو جاتی ہے۔

زیادتی پیشاب:60 سالہ بوڑھے آدمی کو دن رات میں کئی دفعہ پیشاب آتا تھا اور پیشاب آنے پر روک نہیں سکتا تھا۔ اسے دس گرام گوکھرو گھوٹ کر 125 گرام پانی ملا کر چھان کر بغیر میٹھا کئےصرف 3 دن صبح نہار منہ پئیں لینے کی ہدایت کی گئی جس سے اسے مستقل آرام آگیا۔{ حکیم محمد عباس۔ رجسٹرڈ پریکٹیشنرز}

پیشاب کی نالی کے زخم:گوکھرو خورد 20گرام،بیج سروالی دس گرام، سنگجراحت 20 گرام، رال سفید 20گرام، تال مکھانہ 10گرام، مصری 40 گرام۔

 سب ادویہ کو کوٹ پیس کر سفوف بنا لیں۔ خوراک دس گرام ہمراہ دودھ گائے سے لیں۔ جریان، احتلام اور پیشاب کی نالی کے زخموں کے لئے بہت مفید ہے۔

سیلان: گوکھرو خورد 15 گرام،تل کالے 8گرام۔ دونوں کا سفوف بنا لیں اور 9گرام  قدرے شہد ملا کر کھائیں  اوپر سے نیم گرم دودھ استعمال کریں۔ موسم سرما میں بہت مفید ہے۔

Weight N/A
Form

Whole, Powder

Weight

100gm, 250gm, 500gm, 1kg

Reviews

There are no reviews yet.

Be the first to review “Pakhra /گوکھرو – پکھڑا”

Your email address will not be published.

Designed by WZ